عمران خان مجھ سے پوچھیں انہیں راستہ دکھاؤں گا،سراج الحق

اسلام آباد(بولونیوز)امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہاہے کہ عمران خان بات سلطان ٹیپو کی کرتے ہیں اورراستہ شہباز شریف پوچھتے ہیں مجھ سے پوچھیں میں انھیںراستہ دکھاﺅں گا،حکومت ایل او سی پر باڑ کو 5منٹ میں ختم کرے ہم اس کونہیں مانتے ہیں، حکمران کہتے ہیں جہاد شہادت اور مجاہدین کی بات نہ کرو یہ پاکستان کے مفاد کے خلاف ہے یہ پاکستان کا نہیں ٹرمپ کا ایجنڈا ہے،پاکستان کے لوگ بہادر ہیں اور قربانی کے لیے تیار ہیں تمام سیاسی قیادت اپنی لڑائیوں کوالگ رکھ کر کشمیر کے لیے آگے آئیں،14اگست کو کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کے طور پر منایاجائے۔22کروڑ عوام سرینگرکی طرف مارچ کرے گی تومودی کوچھپنےکی جگہ نہیں ملےگی،حکومت آئی ایم ایف کےڈالروں کے لیے کشمیر کے جہاد کو ختم نہ کرے،بھوکا مرنے کے لیے تیار ہیں مگر بے غیرت بنانے کے لیے تیار نہیں ہیں،ایک وقت کی روٹی کھائیں گےمگرآئی ایم ایف کی غلافی برداشت نہیں کریں گے،کشمیرکےلیے عمران خان ایک قدم بڑھائیں ہم سو قدم لیں گے ،کشمیرپر سودا کیا تو ہمارا ہاتھ اور آپ کا گریباں ہوگا، بھارتی سفارت خانے کو تالا لگائے، مسلم دنیا سے بھی بھارت سے تعلقات ختم کرنے کا مطالبہ کروجماعت اسلامی گزشتہ روز اسلام آبادکے زیر اہتمام کشمیر بچاو ریلی سے خطاب کرتے ہوئے سینیٹر سراج الحق نےاسلام آبادمیں بین الاقوامی کشمیر کانفرنس بلانے کا مطالبہ کردیا ہے ۔انھوں نے کہا کہ حریت قیادت کی خواہش کے مطابق فیصلے کئے جائیں،حکمران ایک اور غرناطہ بنانے کی تیاری کررہے ہیں بھارت اندلس کی طرح کشمیریوں کو گھروں سے نکالنے کامنصوبہ بنارہاہے ،حکومت کشمیر کے بجائے مخالفین کو فتح کررہی ہے پارلیمنٹ میں ایک دوسرے کو بےغیرت اوربے شرم کہتی رہی یہ کشمیر کے لیے نہیں مفاد کی لڑائی لڑرہے ہیں،مشتاق خان نے کہاکہ وزیر خارجہ ایکٹنگ زیادہ اور کام کم کرتے ہیں ،چیرمین کشمیر کمیٹی اپنے بالوں کے بنا سنگھار پر سارا وقت دیتے ہیں کشمیر کی آزادی کے لیے روڈ میپ دی جائے ۔ سینیٹر سراج الحق نے خطاب کرتے ہوئے مزید کہاکہ کشمیر میں موجود مظلوم بھائیوں اور بہنوں کو پیغام دیتاہوں کہ ہم آپ کے ساتھ ہیں حکمران بزدل ہیں قوم ہر قربانی کے لیے تیار ہیں۔ کشمیر پاکستان کا شہ رگ ہے اور شہ رگ بھارت کے آرمی کے بوٹوں کے نیچے ہے کشمیری اسلام آباد کی طرف دیکھ رہے ہیں مگر وزیر اعظم مشترکہ اجلاس میں کہاہے کیا کروں ۔بات سلطان ٹیپو کی کرتے ہیں اورراستہ پوچھتے ہیں شہباز شریف سے مجھ سے پوچھو میں راستہ دکھاؤں گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں