حکومت سندھ پرائس کنٹرول اداروں نے دودھ فروشوں کوکھلی چھٹی دے دی

کراچی(بولونیوز)کراچی میں دودھ 110 روپے فی کلو پرفروخت جاری۔سرکاری نرخ 94 روپے فی کلو دودھ فروخت کرنے سے انکار۔مہنگا دودھ فروخت کرنے والے دکانداروں کے خلاف کارروائی سوالیہ نشان۔صوبائی شہری انتظامیہ سمیت تمام متعلقہ ادارے خاموش تماشائی۔غیرقانونی قیمت110پرفروخت سےڈیری مافیا کویومیہ6 کروڑروپے کی اضافی آمدنی۔چند سال قبل ایک سرکاری افسرنے جوش میں آکر بھینس کالونی کا رخ کرنے کی غلطی کی تھی جس پر مذکورہ افسر کو تشدد کا نشانہ بنایا گیا اور سرکاری گاڑی کو بھی شدید نقصان پہنچا جس کے بعد کسی سرکاری افسر نے بھینس کالونی کا رخ کرنے کی غلطی کا ارتکاب نہیں کیا۔کنزیومررائٹس کونسل نے دودھ کی غیرقانونی اور غیرسرکاری قیمت پر فروخت کی مذمت کرتے ہوئے کمشنر سےاپیل کی ہےکہ فوری طورپرتمام ڈسٹرکٹس میں ایس ڈی ایمزاورمجسٹریٹس کوحرکت میں لایا جائے۔دودھ فروشوں کو 94روپے فی لیٹر کی سرکاری قیمت پر فروخت کا پابند بنایا جائے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں