آشیانہ ہاؤسنگ سکیم کیس،نیب کی درخواست سماعت کےلئےمنظور

اسلام آباد(بولونیوز)سپریم کورٹ نےآشیانہ ہاؤسنگ سکیم کیس کےملزمان کی ضمانت منسوخی کیلیےنیب کی درخواست سماعت کےلئےمنظورکرلی۔شہبازشریف، فواد حسن فواد سمیت تمام ملزمان کو2مئی کوطلب کرلیا گیا۔ جسٹس شیخ عظمت سعید کی سربراہی میں 3 رکنی بینچ نے سماعت کی۔ نیب کے وکیل نعیم بخاری نے کہا کہ آشیانہ ہاؤسنگ کے لیے 3 ہزار میں سے 2 ہزارکنال اراضی پیراگون کو دی گئی۔ پیراگون کے ندیم ضیاء اور کامران کیانی مفرور ہیں، دو ملزمان وعدہ معاف گواہ بن گئے۔ شہباز شریف نے احد چیمہ کے ساتھ مل کر بدنیتی کی بنیاد پر ٹھیکہ منسوخ کرایا اور کمپنی کے سربراہ کو گھر بلا کر ہدایات دیں۔ شہبازشریف نےپہلی نیلامی ختم کی جبکہ دوسری نیلامی رکوا دی۔دوران سماعت جسٹس اعجازالاحسن نے ریمارکس دیئے کہ سکیم پر عمل کمپنی نے کرانا تھا تو وزیراعلیٰ کیوں مداخلت کرتے رہے ؟ ہائیکورٹ نے تو ضمانت کیس میں الزامات ہی مسترد کر دیئے اور قرار دیا کہ تمام ٹھیکے میرٹ پر دئیے گئے۔ نعیم بخاری نے کہا کہ ہائی کورٹ کے ججز نے ضمانت دیتے ہوئے عدالتی ذہن استعمال نہیں کیا اور نتیجہ جلد بازی میں اخذ کیا، فیصلے سے ٹرائل بری طرح متاثر ہوگا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں