پی سی بی میں بغاوت، ایم ڈی وسیم خان کی تقرری مسترد

کوئٹہ(بولونیوز)پاکستان کرکٹ بورڈ کی گورننگ باڈی کے کوئٹہ میں ہونے والے اجلاس کا ممبران نے بائیکاٹ کر دیا۔ ایم ڈی وسیم خان کی تقرری اور ڈومیسٹک سٹرکچر میں تبدیلی کو بھی مسترد کر دیا۔ پاکستان کرکٹ بورڈ میں بغاوت سامنے آگئی، پاکستان کرکٹ بورڈ کی گورننگ باڈی کے کوئٹہ میں ہونے والے اجلاس میں پانچ ممبران نئے ایم ڈی وسیم خان کی تقرری کےخلاف قرارداد پیش کردی۔ ممبران نے ڈومیسٹک اسٹرکچر میں تبدیلی کو بھی مسترد کر دیا۔ اجلاس کا بائیکاٹ کرنے والوں میں شہ زر، عبداللہ، ایاز بٹ، کبیر احمد، نعمان بٹ اور شاہ دوست شامل ہیں۔ممبران کا موقف ہے کہ ڈیپارٹمنٹ کرکٹ اورریجن کرکٹ میں تبدیلی منظورنہیں۔چئیرمین پی سی بی احسان مانی دیکھتے ہی رہ گئےجبکہ سب اٹھ کرچلےگئے۔دوسری جانب چیئرمین پی سی بی کا کہنا ہے ذاتی مفادات کی پی سی بی میں کوئی گنجائش نہیں، کوئی غلط فہمی میں نہ رہے، تبدیلیاں ہوکر رہیں گے، پیسی بی اجلاس میں ایجنڈے پر آئے تو 5 ارکان نے 6 نکاتی قرارداد پیش کی، ایم ڈی پی سی بی وسیم خان کی تعیناتی بورڈ آف گورنرزکا فیصلہ تھا۔انہوں نےکہا ہم علاقائی سطح پرکرکٹ کوفروغ دینا چاہتے ہیں،کرکٹ میں اصلاحات کوکوئی نہیں روک سکتا،کوئی پی سی بی بورڈ کا اجلاس ہائی جیک نہیں کرسکتا۔ایک نجی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق احسان مانی کا کہنا تھا بورڈ کے جو فیصلے پہلے ہوچکے وہ تبدیل نہیں ہوں گے، ہم نے شروع سے کہا ہے ہم کرکٹ کو بہتر کریں گے، کسی کو غلط فہمی نہیں ہونی چاہیے کہ ڈومیسٹک کرکٹ میں کوئی رکاوٹ آئے گی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں