عوام کوانصاف انکی دہلیزپرپہنچانےکا مشن جاری رہے گا،ایس ایس پی مانسہرہ

مانسہرہ(بولونیوز)ڈسٹرکٹ پولیس آفیسرمانسہرہ ایس۔ایس۔پی زیب اللہ خان کاعوام کوانصاف انکی دہلیزپرپہنچانےکا مشن جاری تھانہ خاکی کی حدود بی۔ایچ۔یو بھیرکنڈ میں کھلی کچہری عوام کی بڑی تعداد میں شرکت۔تفصیلات کےمطابق ڈی۔پی۔او مانسہرہ ایس۔ایس۔پی زیب اللہ خان نےبی۔ایچ۔یوبھیرکنڈ میں کھلی کچہری کی جس میں عوام کی بڑی تعداد نےشرکت کی راپنے مسائل۔شکایات اور تجاویز سے ڈی۔پی۔او مانسہرہ ایس۔ایس۔پی زیب اللہ خان کو آگاہ کیا۔جن کے فوری حل کےلئیے ڈی۔پی۔او مانسہرہ نےاحکامات جاری کئیے۔کھلی کچہری کاباقاعدہ آغازتلاوت قرآن پاک سےکیاگیا۔ڈی۔پی۔اومانسہرہ کا کہنا تھا کہ خیبر پختونخواہ پولیس شہیدوں اور غازیوں کی پولیس فورس ہے۔خطے کے پائیدار امن کے لئیے خیبر پختونخواہ پولیس نے بے تحاشا قربانیاں دی ہیں۔دہشت گردی کےخلاف جنگ میں سکیورٹی فورسز کے شانہ بشانہ کھڑے ہوکر خیبر پختونخواہ کی عوام نے بھی محب الوطنی کامظاہرہ کرتےہوۓ پولیس اورسکیورٹی اداروں کاساتھ دیا ہے۔انکامزید کہنا تھا کہ مانسہرہ پولیس مکمل طورپرسیاسی مداخلت سے آزاد ہے۔اور میرٹ پر کام کررہی ہے اور عوام کے مسائل کو حل کرنے کے لئیے تمام وسائل برؤۓ کار لا رہی ہے۔ڈی۔پی۔او مانسہرہ ایس۔ایس۔پی زیب اللہ خان نے عوام سے خطاب کرتے ہوۓکہاکہ کھلی کچہری کا انعقاد پولیس اورعوام کے درمیان قربتیں مزید بڑھانا اور پولیس تک عوام کی رسائ اور عوام کے مسائل سے آگاہی ،جرائم کی روک تھام میں کمی کے لئیے اور ضلع مانسہرہ میں قیام امن کے لئیے عوام کا تعاون حاصل کرنا ہے۔ڈی۔پی۔او مانسہرہ کاکہنا تھا کہ جرائم کی روک تھام کےلئیے پولیس اورمشران علاقہ اورعوام کومشترکہ کام کرنا ہوگا۔ہوائ فائرنگ پربات کرتے ہوۓ ڈی۔پی۔اومانسہرہ ایس۔ایس۔پی زیب اللہ خان کا کہنا تھا کہ مانسہرہ میں ہوائ فائرنگ ایک ناسورکی شکل اختیارکرچکی تھی۔جس کےلئیے انسہرہ پولیس نےدن رات محنت کرکے%99قابوپالیا ہے۔انکا کہنا تھا کہ ہوائ فائرنگ کرنےوالےتمام افراد کےخلاف مانسہرہ پولیس نے بھرپور کاروائیاں کرتے ہوۓ گزشتہ ہفتے کے دوران فائرنگ ایکٹ کے تحت 52مقدمات درج کئیے گئیے۔منشیات ےسوال پر ڈی۔پی۔اومانسہرہ ایس۔ایس۔پی زیب اللہ خان کا کہنا تھا کہ نوجوان نسل کو تباہ کرنے کی کسی کو ہرگز اجازت نہیں دیں گے۔مانسہرہ پولیس نےمنشیات فروشوں کےخلاف گرینڈ آپریشن شروع کردیا ہے۔گزشتہ ایک ہفتےکےدوران 5کلو54گرام چرس برآمد کی گئ اور 9CCNSAکے تحت مقدمات درج کئیے گئیے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں