ہندوانتہاپسندوں کا بزرگ مسلمان پرتشدد،گوشت فروخت کرنیکا الزام

نئی دہلی(بولونیوز)بھارتی ریاست آسام میں انتہاپسندوں نےبزرگ مسلمان پرگائےکا گوشت فروخت کرنے کا الزام لگا کر تشدد کا نشانہ بنایا،مودی کےغنڈوں نےناپاک جانورکا گوشت کھانےپربھی مجبورکیا۔بھارت میں انتہا پسندوں کو کھلی چھوٹ، مسلمانوں کا جینا حرام کر دیا۔ آسام میں بزرگ مسلمان شوکت علی کو گائے کے گوشت کی فروخت کا الزام لگا کر بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنایا۔ 68 سالہ شہری کو کیچڑ میں بٹھا کر ناپاک جانور کا گوشت کھانے پر بھی مجبور کیا گیا۔ایک نجی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق بزرگ شہری کو زخمی حالت میں ہسپتال منتقل کر دیا گیا۔ بھارتی میڈیا کے مطابق ویڈیو منظر عام پر آنے کے بعد پانچ افراد کو حراست میں لیا گیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں