مودی کاجنگی جنون،روس سے اکھولاٹونیوکلیئرآبدوزلینے کا معاہدہ

نئی دہلی(بولونیوز)خون کی بھوکی مودی سرکار کا جنگی جنون، روس سے 3 ارب ڈالر کی اکھولا ٹو نیوکلیئر آبدوز لینے کا معاہدہ کرلیا۔ دفاتر میں تعینات 20 فیصد فوجی افسران کو پاکستان اور چائنہ بارڈر پرتعینات کرنے کا فیصلہ اور مقبوضہ کشمیر کےعلاقے راجوڑی میں سرحد پر مزید 200 بنکرز بنانے کی منظوری دے دی۔پاکستان سے بحری اور فضائی محاذ پر شکست کے بعد بھارت حواس باختہ ہوگیا۔ جنگی خبط میں مبتلا بھارت نے روس کے ساتھ اکھولا ٹو نیوکلیئر آبدوز دس سال کیلئے لیز پر لینے کا معاہدہ کرلیا، معاہدے کی مالیت 3 ارب ڈالر ہے۔وزیر دفاع نرملا ستھارمن نے فوج میں اصلاحات کے پہلے مرحلے کی منظوری دے دی جس کے تحت آرمی ہیڈکوارٹرز سے 229 آفیسرز کی دوسری جگہ تقرری کی جائیگی۔ ڈپٹی چیف فار ملٹری آپریشنز اینڈ سٹریٹجک پلاننگ کا نیا عہدہ بنایا جائیگا جبکہ انسانی حقوق کی صورتحال کے جائزے کیلئے ایک نیا ونگ بھی تشکیل دیا جائیگا۔ایک نجی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق آرمی ہیڈ کوارٹر سے 20 فیصد بھارتی فوجیوں کو چین اور بھارت کی سرحد پر تعینات کیا جا رہا ہے۔ مودی سرکار نے مقبوضہ کشمیر کے علاقے راجوڑی میں سرحد کے قریب 200 مزید بنکرز بنانے کی منظوری دے دی جن میں 180 انفرادی اور 20 کمیونٹی بنکرز ہیں، بھارت سرحد کے قریب 14 ہزار بنکرز تعمیر کر رہا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں