پاکستان بروکرز ایسوسی ایشن نے وزیراعظم سے ملاقات

کراچی ( ایچ آر این ڈبلیو ) پاکستان بروکرز ایسوسی ایشن نے وزیراعظم پاکستان عمران خان کو بتایا کہ حکومت کی جانب سے بجٹ میں ایڈوانس ٹیکس کی شرح کو اعشاریہ صفر ایک فیصد سے بڑھا کر اعشاریہ صفر دو فیصد کرنے کے بعد سے مارکیٹ میں تجارتی حجم میں کچھ کمی ہوئی ہے سٹاک بروکروں نے مطالبہ کیا کہ روپے کی قدر میں کمی اور دیگر معاشی حالات کو دیکھتے ہوئے، حکومت کو اسٹاک مارکیٹ کے لئے اسٹاک مارکیٹ ایسوسی ایشن کی سفارشات کو مد نظر رکھتے ہوئے کچھ مراعات دینی چاہیئے جس سے سے سرمایہ کاروں کے اعتماد میں یقینی اضافہ ہوگا- سٹاک بروکرز نے وزیراعظم کے حالیہ معاشی اقدامات کے فیصلوں کو بھی سراہا اور حکومت۔ کو معیشت کی ترقی کے لئے اپنے بھرپور کردار ادا کرنے کے عزم کا اعادہ بھی کیا- واضح رہے اسٹاک ایکس چینج کے ایک بروکر جہاُگیر صدیقی جو نواز شریف دور حکومت میں اسٹاک مارکیٹ کے لئے بے جا پالیسیاں مرتب کرکے سابق وزیر اعظم نواز شریف کو پیش کرتے رہے جس سے اسٹاک مارکیٹ کے سرمایہ کاروں میں منفی تاثر پیدا ہوا اور اسٹاک مارکیٹ کے سرمایہ کاروں کے اعتماد کو بھی دھچکا پہنچایا گیا اور جہاُگیر صدیقی اپنے مذموم مقاصد کی تکمیل کے لئے آج کی ہونی والی اسٹاک بروکرز ایسوسی ایشن کی وزیراعظم سے کامیاب میٹینگ کے حوالے سے منفی تاثر پیدا کررہے ہیں تاکہ جہاُنگیر صدیقی اور انکے دست راست تمام افراد کے خلاف پچھلے سات سالوں پر محیط عرصہ کے لئے حالیہ طے پانے والی ایف آئی اے کی انکوائری پر بے جا دباؤ بڑھایا جا سکے

اپنا تبصرہ بھیجیں