ٹھوکرنیاز بیگ،لاہورمیں کسانوں کا دھرنا 24 گھنٹے کے بعد بھی جاری

لاہور(بولونیوز)لاہور میں پنجاب بھرکے کسانوں کا ٹھوکرنیاز بیگ پرحکومت کیخلاف دھرنا دوسرے روز بھی جاری ہے،کسانوں نے داخلی راستہ بند کر دیا جس سے شہریوں کو مشکلات کا سامنا ہے، کسانوں نے مطالبات تسلیم نہ کرنے تک دھرنا جاری رکھنے کا اعلان کر دیا۔تفصیلات کے مطابق پنجاب بھرسے کسان ٹریکٹر ٹرالیوں سمیت چھوٹی، بڑی 500 سے زائد گاڑیوں پر سوار ہو کر ٹھوکر نیاز بیگ پہنچے اور احتجاج کیا، مظاہرین نے ڈھول بھی بجایا اور رقص کر کے الگ انداز میں احتجاج کیا۔ مطالبات پورے ہونے تک دھرنا جاری رکھنے کا اعلان کر دیا۔ کسانوں نےشہر کا رخ کرنے کی دھمکی دے دی۔ایک نجی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق حکومت اور کسان اتحاد کے درمیان ہونیوالے مذاکرات ناکام ہوگئے۔ انتظامیہ نے ملتان روڈ کو مکمل طور پر بند کر دیا۔ ملتان روڈاور ٹھوکر نیاز بیگ بند ہو جانے کے باعث سارا دن جوہر ٹاؤن، اقبال ٹاؤن، وفاقی کالونی، گلشن راوی اور سبزہ زار کو متبادل راستوں کے طور پر استعمال کیا گیا جس کے باعث ان سڑکوں پر ٹریفک کا شدید دباؤ رہا اور ٹریفک پولیس متبادل راستوں پر ٹریفک کو رواں رکھنے میں ناکام رہی۔ ٹریفک میں پھنسے لوگ کہتے رہے کہ مطالبات حکومت نہیں مان رہی تو بیچارے عوام کا کیا قصور ہے۔یاد رہے ٹھوکر نیاز بیگ پر احتجاج کے باعث شہر کے داخلی اور خارجی راستے بند ہو گئے تھے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں