سرفرازاحمد کیلئے واپسی کے دروازے کھلے ہیں،مصباح الحق

لاہور(بولونیوز)ہیڈ کوچ وچیف سلیکٹرمصباح الحق کاکہناہے دورہ آسٹریلیا کیلئے ان کھلاڑیوں کو شامل کیا گیا ہے جو آسٹریلیا کوٹف ٹائم دے سکیں،سرفرازاحمد ڈومیسٹک کرکٹ میں اپنی کارکردگی بہترکرکےٹیم میں کم بیک کرسکتے ہیں۔ایک نجی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق مصباح الحق کا کہنا تھا کہ کپتانی سے ہٹانے اور ڈراپ کرنے کا فیصلہ کارکردگی کی بنیاد پر کیا گیا،ان کےخلاف کوئی سازش نہیں ہو رہی، حفیظ اور شعیب ملک کیلئے ورلڈ کپ تک دروازے کھلے ہیں جبکہ سلمان بٹ اور فواد عالم کی ضرورت پیش آئی توموقع دیاجائےگا۔قذافی سٹیڈیم میں پریس کانفرنس کرتےہوئے انہوں نے کہا کہ آسٹریلیا سیریز ہمارے لیے بہت اہم اور بڑا چیلنج ہے۔ انگلینڈ، آسٹریلیا اور جنوبی افریقہ کی کرکٹ پوری دنیا میں مانی جاتی اور جو کھلاڑی یہاں اچھا کھیلتا ہے اس کو دنیا میں مانا جاتا ہے اس لیے کچھ تجربہ کار کھلاڑیوں کو بھی ٹیم میں رکھا گیا ہے، ٹیم کا انتخاب ڈومیسٹک کوچز کی رپورٹ اور کپتان سے مشاورت کے بعد کیا۔چیف سلیکٹر کا کہنا تھا کہ ہم آسٹریلیا کے خلاف کوئی تجربہ نہیں کرنے جا رہے بلکہ ہم نے سیریز جیت کر آنی ہیں، نوجوان کھلاڑیوں کو شامل کرنے کا مقصد یہ ہے کہ وہ بہادری کے ساتھ کھیلیں ۔ کپتانی کا فیصلہ کرنا صرف چیئرمن پی سی بی کا اختیار ہے، سرفراز نے پاکستان کیلئے بہت عرصہ کھیلا اور ان کی ملک کیلئے بہت خدمات ہیں۔انہوں نے کہا کہ شان مسعود اور عابد اچھی فارم میں ہیں اور ان کے ساتھ امام الحق کو بھی شامل کیا گیا ، ابھی جو بہتر تین اوپنر لگے ان کا انتخاب کیا۔ عثمان قادر نے غیر ملکی اور نیشنل ٹورنامنٹ میں اچھی باؤلنگ کی ، شاداب پر بہت محنت کرنے کی ضرورت ہے۔ حسنین کے فزیو اور ٹرینر نے طویل دورانیے کی کرکٹ سے روکا ہے۔

لاہور(بولونیوز)ہیڈ کوچ وچیف سلیکٹرمصباح الحق کاکہناہے دورہ آسٹریلیا کیلئے ان کھلاڑیوں کو شامل کیا گیا ہے جو آسٹریلیا کوٹف ٹائم دے سکیں،سرفرازاحمد ڈومیسٹک کرکٹ میں اپنی کارکردگی بہترکرکےٹیم میں کم بیک کرسکتے ہیں۔ایک نجی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق مصباح الحق کا کہنا تھا کہ کپتانی سے ہٹانے اور ڈراپ کرنے کا فیصلہ کارکردگی کی بنیاد پر کیا گیا،ان کےخلاف کوئی سازش نہیں ہو رہی، حفیظ اور شعیب ملک کیلئے ورلڈ کپ تک دروازے کھلے ہیں جبکہ سلمان بٹ اور فواد عالم کی ضرورت پیش آئی توموقع دیاجائےگا۔قذافی سٹیڈیم میں پریس کانفرنس کرتےہوئے انہوں نے کہا کہ آسٹریلیا سیریز ہمارے لیے بہت اہم اور بڑا چیلنج ہے۔ انگلینڈ، آسٹریلیا اور جنوبی افریقہ کی کرکٹ پوری دنیا میں مانی جاتی اور جو کھلاڑی یہاں اچھا کھیلتا ہے اس کو دنیا میں مانا جاتا ہے اس لیے کچھ تجربہ کار کھلاڑیوں کو بھی ٹیم میں رکھا گیا ہے، ٹیم کا انتخاب ڈومیسٹک کوچز کی رپورٹ اور کپتان سے مشاورت کے بعد کیا۔چیف سلیکٹر کا کہنا تھا کہ ہم آسٹریلیا کے خلاف کوئی تجربہ نہیں کرنے جا رہے بلکہ ہم نے سیریز جیت کر آنی ہیں، نوجوان کھلاڑیوں کو شامل کرنے کا مقصد یہ ہے کہ وہ بہادری کے ساتھ کھیلیں ۔ کپتانی کا فیصلہ کرنا صرف چیئرمن پی سی بی کا اختیار ہے، سرفراز نے پاکستان کیلئے بہت عرصہ کھیلا اور ان کی ملک کیلئے بہت خدمات ہیں۔انہوں نے کہا کہ شان مسعود اور عابد اچھی فارم میں ہیں اور ان کے ساتھ امام الحق کو بھی شامل کیا گیا ، ابھی جو بہتر تین اوپنر لگے ان کا انتخاب کیا۔ عثمان قادر نے غیر ملکی اور نیشنل ٹورنامنٹ میں اچھی باؤلنگ کی ، شاداب پر بہت محنت کرنے کی ضرورت ہے۔ حسنین کے فزیو اور ٹرینر نے طویل دورانیے کی کرکٹ سے روکا ہے۔

لاہور(بولونیوز)ہیڈ کوچ وچیف سلیکٹرمصباح الحق کاکہناہے دورہ آسٹریلیا کیلئے ان کھلاڑیوں کو شامل کیا گیا ہے جو آسٹریلیا کوٹف ٹائم دے سکیں،سرفرازاحمد ڈومیسٹک کرکٹ میں اپنی کارکردگی بہترکرکےٹیم میں کم بیک کرسکتے ہیں۔ایک نجی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق مصباح الحق کا کہنا تھا کہ کپتانی سے ہٹانے اور ڈراپ کرنے کا فیصلہ کارکردگی کی بنیاد پر کیا گیا،ان کےخلاف کوئی سازش نہیں ہو رہی، حفیظ اور شعیب ملک کیلئے ورلڈ کپ تک دروازے کھلے ہیں جبکہ سلمان بٹ اور فواد عالم کی ضرورت پیش آئی توموقع دیاجائےگا۔قذافی سٹیڈیم میں پریس کانفرنس کرتےہوئے انہوں نے کہا کہ آسٹریلیا سیریز ہمارے لیے بہت اہم اور بڑا چیلنج ہے۔ انگلینڈ، آسٹریلیا اور جنوبی افریقہ کی کرکٹ پوری دنیا میں مانی جاتی اور جو کھلاڑی یہاں اچھا کھیلتا ہے اس کو دنیا میں مانا جاتا ہے اس لیے کچھ تجربہ کار کھلاڑیوں کو بھی ٹیم میں رکھا گیا ہے، ٹیم کا انتخاب ڈومیسٹک کوچز کی رپورٹ اور کپتان سے مشاورت کے بعد کیا۔چیف سلیکٹر کا کہنا تھا کہ ہم آسٹریلیا کے خلاف کوئی تجربہ نہیں کرنے جا رہے بلکہ ہم نے سیریز جیت کر آنی ہیں، نوجوان کھلاڑیوں کو شامل کرنے کا مقصد یہ ہے کہ وہ بہادری کے ساتھ کھیلیں ۔ کپتانی کا فیصلہ کرنا صرف چیئرمن پی سی بی کا اختیار ہے، سرفراز نے پاکستان کیلئے بہت عرصہ کھیلا اور ان کی ملک کیلئے بہت خدمات ہیں۔انہوں نے کہا کہ شان مسعود اور عابد اچھی فارم میں ہیں اور ان کے ساتھ امام الحق کو بھی شامل کیا گیا ، ابھی جو بہتر تین اوپنر لگے ان کا انتخاب کیا۔ عثمان قادر نے غیر ملکی اور نیشنل ٹورنامنٹ میں اچھی باؤلنگ کی ، شاداب پر بہت محنت کرنے کی ضرورت ہے۔ حسنین کے فزیو اور ٹرینر نے طویل دورانیے کی کرکٹ سے روکا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں