1992 سے آج تک اورنگی ٹاؤن کے رہائشی مسائل سے دوچار ہیں

کراچی(بولونیوز)کراچی کےعلاقےاورنگی ٹاؤن سیکٹر11 مدینہ کالونی یوسی 25 اور پی ایس 118 کی عوام جو آپکے سامنے ہیں کس دشواری مسائل سے دوچار ہیں یہ آج کا نہیں 1992 سے ان مسائل کا شکار ہیں یہ علاقہ لاوارث نہیں اس علاقے کے (ایم پی اے) بھی ہیں اور (ایم این اے) بھی ہیں یو سی چیرمین بھی ہیں۔یہاں پانی آتا ہے پر منظور نظر زمیداران کےالاقوں تک اورنگی xcn کودرخاست پےدرخاست دیا2015 سےاپریل 2019 تک درخاست دیاانکےپاس فنڈ کارونا ہوتا ہے۔اکتوبر2018 علاقےمیں کام ہوامنظورنظرافراد تک آگےکےلئے فنڈ نہیں تھا xcn سے پوچھنے پر جواب ملا فنڈ نہیں ہے غریبوں کے مسائل انکے حل کے لئے کسی کی توجہ نہیں MPAسےکئی بار اہل محلے کی مٹنگ ہوئی مگر ہر بار فنڈ کا رونا صرف تسلی آج بھی یہ انجمن محمّدی اسکول گلی اطراف کی گلی میں پانی کی 4 انچ پائیپ لائن نہیں ڈالی گئی۔1992میں ان غریب عوام کےلئے ایک بوسٹن پمپ منظور ہوا پرطاقتوروں نےدوسری جگہ لگوادیا۔عوام سوال کرتی ہےحکومت وقت سےعمران خان سےصدر پاکستان سے ان سیاسی زمیداران سے کس سے فریاد کریں کون سنے گا ان غریبوں کی آواز خدارا خدارا توجہ دیں۔واٹر بورڈ کے تمام زمیدار کو نیچے سے اوپر تک درخاست دیا ہوا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں