بھتہ نہ دینے پر مزدورکوغیرقانونی حراست میں رکھنے کا انکشاف

کراچی(بولونیوز)پولیس افسربھتہ خوری میں ملوث نکلے۔بھتہ نا دینےپرمزدورں کوغیرقانونی حراست میں رکھنےکاانکشاف۔عدالت نے ایس ایس پی کورنگی کوایس ایچ اوکورنگی انڈسٹریل ایریاعبید اللہ کےخلاف مقدمہ درج کرنےکاحکم دے دیا۔اگر ایس ایس پی نےایس ایچ اوکےخلاف مقدمہ درج نہیں کیاتوقانون کےمطابق کاروائی کی جائے گی۔ایس ایچ او کورنگی انڈسٹریل ایریا مزدورں کو حوالات میں رکھنے سے متعلق عدالت کو مطمن نہیں کرسکے۔دیکھنے میں آیا ہے پولیس معصوم شہریوں مختلف مقاصد کے لیے اٹھا کر نامعلوم مقام رکھتی ہے۔شہریون کو پولیس کے رحم و کرم پر نہیں چھوڑا جا سکتا ہے۔ایس ایچ اوکورنگی انڈسٹریل ایریا عبید اللہ نے مزدورں کو غیر قانونی طور پر حوالات میں بند کیا۔ایس ایچ او نے مہران ٹاون سے پلاٹ پر کاروائی کرکہ دس مزدورں کو گرفتار کیا تھا۔ایس ایچ او نے مزدورں کی رہائی کے لئے تین لاکھ روپے رشوت طلب کی تھی۔ایس ایچ اوکورنگی انڈسٹریل ایریا کو70ہزار ادا کئے مگر دو لاکھ 30 ہزار مزید ڈیمانڈ کر رہا تھا۔مذکورہ پلاٹ کی ملکیت کےحوالےسےمختلف عدالتوں میں کیسززیرسماعت ہیں۔ایس ایچ اوکورنگی انڈسٹریل ایریا عبیدالرحمان کے خلاف زیر سماعت پٹیشن میں سیشن کورٹ کے آرڈر پر جسٹس صلاح الدین نے آئی جی سندھ سے ایس ایچ او کورنگی انڈسٹریل عبیدالرحمان کو نوکری سے فارغ کرکے رپورٹ عدالت میں جمع کرانے کا حکم جاری کردیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں