عیدکے روزجلی ہوئی لاش برآمد،بھائی آکاش بھی شامل،گرفتارنہ ہوسکا

کراچی(بولونیوز)پنجاب کے رہائشی نوجوان کی عید کے روز کراچی میں جلی ہوئی لاش ملنے کا معاملہ،شبانہ گینگ پیشہ ور اور بھی قتل میں ملوث ہونے کا امکان، تفتیش کا دائرہ کار وسیع،پیشہ ور گینگ ڈیرہ غازی خان میں مشہور ہے، گینگ نے گوجرانوالہ کے مقتول علی کی انگلیاں اور ٹانگ بھی کاٹی ،قتل کے بعد لاش پل پر پھینکی ، پولیس نہیں پہنچی تو پیٹرول جھڑک کر آگ لگا دی، گرفتار ملزمہ شبانہ کی تمام وارداتوں میں بھائی اکاش بھی شامل ، اکاش گرفتار نہ ہوسکا،لاش کو ہائی روف میں رکھ کر گھومتے رہے، کسی ادارے نے چیکنگ نہیں کی،ملزمہ پیشہ ور گینگ ، جس کے باعث قتل کیا ،سعودیہ سے گینگ میں موجود شبانہ کو ویسٹرن یونین سے 30ہزار روپے ماہانہ بھیجتا تھا، رقم کی ٹرانزیکشن کی تفصیلات بھی تحیققاتی اداروں نے حاصل کرلی،مزید افراد کے قتل کی بھی تحقیقات شروع کردی گئی،مقتول علی کے قتل میں ملزمہ شبانہ اور اسکا ساتھی خلیل گرفتار ہوچکے،ملزمہ شبانہ اکمل کا بھائی تاحال فرار ہے،مقتول علی کی بہن کی وزیر اعلی اور دیگر اداروں سے انصاف کی اپیل

اپنا تبصرہ بھیجیں