بچوں کوجیل بھیجاتومیں بھی انکے ساتھ جاؤں گی،نوازشریف کی والدہ

لاہور(بولونیوز)سابق وزیراعظم نوازشریف کی والدہ شمیم اخترکا کہنا ہے کہ اگران کے بچوں کوجیل بھیجا گیا تو وہ بھی ان کے ساتھ جیل جائیں گی۔تفصیلات کے مطابق نواز شریف کی والدہ نے کہا کہ پاکستان کا بیٹا میرا بیٹا ہے جس نے اسے روشن بنایا، کل وہ واپس آرہا ہے تاکہ میں پھر سے اس کا ماتھا چوم سکوں۔شمیم اختر نے کہا کہ میرے بیٹے نواز شریف، مریم اور صفدر کے خلاف ناحق فیصلہ آیا، میں ان تینوں کوجیل جانے نہیں دوں گی،اگرجیل بھیجا گیا تومیں بھی ان کے ساتھ جاؤں گی۔ایک نجی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق سابق وزیراعظم کی والدہ نے کہا کہ ان کا ایمان ہے یہ تینوں بے گناہ ہے اور اللہ تعالیٰ ان کی حفاظت کرے گا، ظالموں کو خدا کے خوف اوراس کی پکڑ سے ڈرنا چاہیے۔نوازشریف کی والدہ کا مزید کہنا تھا کہ عدالت نے خود فیصلے میں لکھا کہ کرپشن ثابت نہیں ہوئی توپھرمیرے بچوں کو سزا کس بات کی دی جارہی ہے،صرف ووٹ کوعزت دو کا نعرہ لگانے اورملک سے وفاداری کی سزا دی جارہی ہے۔یاد رہے سابق وزیراعظم نواز شریف نے کل لندن سے لاہور آنے کا اعلان کر رکھا ہے اور اس سے قبل نیب نے ان کی گرفتاری کے لئے تمام انتظامات بھی مکمل کرلیے ہیں۔نوازشریف اورمریم کی گرفتاری کیلئے 16 رکنی ٹیم تشکیل دی گئی ہے جب کہ ذرائع کا کہنا ہے کہ نیب نے دو ہیلی کاپٹرز کا انتظام بھی کر لیا ہے۔ ایک ہیلی کاپٹرلاہوراوردوسرا اسلام آباد ایئرپورٹ پرکھڑا کیا جائے گا،کسی بھی ایئرپورٹ پراترتے ہی نوازشریف اور مریم نواز کو ہیلی کاپٹر کے ذریعے اڈیالہ جیل منتقل کیا جائے گا۔خیال رہے احتساب عدالت نے 6 جولائی کو ایون فیلڈ ریفرنس کا فیصلہ سناتے ہوئے نواز شریف کو مجموعی طور پر 11، مریم نواز کو 8 اور کیپٹن (ریٹائرڈ) صفدر کو ایک برس قید کی سزائیں سنائی تھیں۔