اورنگی میں گٹکامافیاسرگرم،گھروں اور دکانوں میں سپلائی جاری ہے

کراچی(بولونیوز)اورنگی ڈویژن میں گٹکا مافیا ایک بارپھرسرگرم SSP ویسٹ ڈاکٹررضوان کی سخت پالیسی کا فائدہ اٹھاتے ہوئے گھراور پان کے کیبن دکانوں میں سپلائی جاری مذکور جیلانی ماوا گٹکا خفیہ طور پر40 سے 50 روپے میں بکنے لگی نوجوان نسل کینسر جیسے موذی مرض میں مبتلا ہونے لگی-یاد رہے علاقہ پولیس کمپلین کے خوف سے کارروائی سے کترانے لگی-اس کی بڑی وجہ گزشتہ روز جرمنی اسکول میں ایس ایس پی ویسٹ کی عوام سے کھلی کچہری میں پولیس کے خلاف شکایت وصولی کے لیے اعلان کردیا گیا-واضح رہے کہ جیلانی ماوا کے سرغنوں کے پولیس کے بعض کرپٹ افسران و اہلکاروں سے خفیہ رابطہ ہے جو تھانیداروں کو فون کرکے زیر حراست ملزم کو بھی آزاد کروالیتے ہیں پکڑے صرف وہ غریب ہیں جو کرپٹ اہلکاروں سے مک مکا میں ناکام ہوتے ہیں علاقہ مکینوں نے نئے آئی جی سندھ ڈی آئی جی ایس ایس پی ویسٹ سے مذکور گٹکا ماوا جیلانی کے ان ٹھکانوں پر بھی پولیس کو چیکنگ کرنے کے سخت احکامات دینے کا مطالبہ کیا ہے-