40 روپے کے جھگڑے نے 3 بچوں کے باپ کی جان لے لی

قصور(بولونیوز)عدم برداشت نے3 بچوں کے باپ کی جان لے لی،تفصیلات کے مطابق ٹی اسٹال پر40 روپے سے بڑھنے والا جھگڑا خونریزی میں تبدیل ہوگیا،یاد رہے کہ پرانے لاری اڈہ میں قائم لطیف ٹی اسٹال پرسرکاری اسکول کے ٹیچرزشبیربھٹی اورشفیق ڈوگرچائے پینے گئے دکاندار سے تلخ کلامی ہوگئی-اس ضمن میں دکاندارنے فون کے ذریعے قریبی علاقہ سے ساتھیوں کوبلا لیا- تا ہم 25 سے زائد افراد نے حملہ آورہوکر دونوں ٹیچرزکو وحشیانہ تشدد کا نشانہ بنا ڈالا-یاد رہے کہ تشدد سے دونوں ٹیچرزشدید زخمی ہونے کے بعد DHQ ہسپتال ریفرکردئیے گئے-خیال رہے کہ دونوں ٹیچرز کے سینے پرگہری چوٹیں آنے کےباعث شبیربھٹی ہسپتال میں دم توڑ گیا-ذرائع کے مطابق مقتول گورنمنٹ اسکول کاٹیچر3 بچوں کا باپ تھا-چائے فروش اور اس کے ساتھیوں نے شدید تشدد کیا،ڈاکٹروں نے شبیر بھٹی پرتوجہ بھی نہیں دی-مقدمہ کے اندراج کے لیے مقتول کے ورثاء کی طرف سے تھانہ اے ڈویژن میں درخواست دائرکردی گئی-تا ہم پولیس نے کارروائی شروع کردی۔