دیپال پورقاری جلاد بن گیا،سبق یاد نہ کرنے پر10سالہ بچی پرتشدد

دیپال پور(بولونیوز)قاری جلادبن گیا،سبق یادنہ کرنے پر 10سالہ بچی پر وحشیانہ تشدد،بجلی کی تار کیساتھ مارمار کر بیہوش کردیا، بچی کے ورثاء کے پوچھنے پر طیش میں آکر قتل کی دھمکیاں دینے لگا،اہل محلہ کا احتجاج،نام نہاد مولوی کے خلاف سخت کاروائی کا مطالبہ دیپال پور کے نواحی علاقہ تاراسنگھ میں معلم کا سبق یادنہ کرنے پر بچی کو وحشیانہ تشدد کا نشانہ بنا ڈالا۔بچی کے والد غلام مصطفی کا کہنا ہے کہ قاری رضوان اپنے گھر میں بچیوں کو پڑھاتا ہے جہاں اس کی بچی بھی پڑھتی ہے ۔گزشتہ روز بھی میری بچی عائشہ اس کے پاس پڑھنے کیلئے گئی لیکن کافی دیر ہوگئی اور وہ واپس نہ آئی تو ہم پریشان ہوئے اس دوران ہی ہمیں ایک شخص نے آکر بتایا کہ ان کی بچی گلی میں بیہوش پڑی ہے ۔جس کو ہم نے جاکر سنبھالا جب وہ ہوش میں آئی تو اس نے بتایا کہ اسے مولوی صاحب نے بجلی کی تاروں کیساتھ پیٹا ہے جب ہم نے اس بابت مولوی قاری رضوان سے پوچھا تو وہ آپے سے باہر ہوگیا اور گھر سے پستول لاکر ہمیں قتل کی دھمکیاں دینے لگا۔اس زیادتی پر اہل محلہ نے بھی سخت احتجاج کرتے ہوئے ملزم کے خلاف سخت ترین کاروائی کا مطالبہ کیا ہے۔ جبکہ بچی کے والد کے مطابق پولیس نے مقدمہ تو درج کر لیا ہے تاہم ملزم پولیس کی گرفت سے آزاد ہے بچی کے ورثاء اور اہل محلہ نے چیف جسٹس آف پاکستان سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے-