خواجہ حارث اسلام آباد ہائیکورٹ میں مقدمے سے بھی دستبردار

اسلام آباد(بولونیوز) نوازشریف کے وکیل خواجہ حارث اسلام آباد ہائیکورٹ میں زیرسماعت مقدمے سے بھی دستبردارہوگئے۔ایون فیلڈ پراپرٹیزریفرنس میں حتمی دلائل موخرکرنے کی درخواست کی سماعت کے دوران عدالت نے کہا کہ احتساب عدالت سماعت جاری رکھے۔تفصیلات کے مطابق اسلام آ باد ہائی کورٹ کے جسٹس عامر فاروق اورجسٹس محسن اخترکیانی نے درخواست کی سماعت کی۔ عدالتی نوٹس پر ڈپٹی پراسیکیوٹر جنرل نیب سردار مظفر عباسی عدالت کے روبرو پیش ہوئے۔ ڈپٹی پراسیکیوٹرنے موقف اختیارکیا کہ پراسیکیوشن ایون فیلڈ پراپرٹیز ریفرنس میں حتمی دلائل مکمل کر چکی ہے، خواجہ حارث نے سپریم کورٹ کے حکم نامے سے پہلے ہی وکالت نامہ واپس لے لیا جبکہ حکم نامے کے بعد تو ویسے ہی یہ درخواست غیر موثر ہو چکی ہے۔ایک نجی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق جسٹس محسن اختر کیانی نے ریمارکس دئیے کہ وکیل نہ آئے تو درخواست پر کون دلائل دے گا ؟ کیا نواز شریف خود عدالت آئیں گے ؟ اسلام آباد ہائی کورٹ نے احتساب عدالت کو سماعت جاری رکھنے کی ہدایت کرتے ہوئے سماعت 20 جون تک ملتوی کر دی۔