پی ایس110پرمتحدہ مجلس عمل میں اختلافات سامنے آگئے

کراچی(بولونیوز)پی ایس110پرمتحدہ مجلس عمل میں اختلافات سامنے آگئے،جے یوآئی( ف) کے سیدعبیداللہ شاہ نے بھی کاغذات نامزدگی جمع کرادئیے-تفصیلات کے مطابق سیدعبیدشاہ جے یوآئی کے درجنوں کارکنوں کے ہمراہ سٹی کورٹ پہنچے،ان کے ہمراہ امیر قاری محمد شعیب،انجینئرمنگول خان، ادریس خان ،یاسرخان جدون،عبدالجبار،عنایت شاہ اوردیگر بھی موجود تھے-جمعیت علماء پاکستان کے عبدالقادر پہلے ہی کاغذات نامزدگی جمع کراچکے ہیں اورایم ایم اے کے ٹکٹ پرامیدوار ہے-یاد رہے کہ جے یوآئی ضلع جنوبی کے بعض رہنمائوں نے 2013 کے عام انتخابات اور گذشتہ بلدیاتی انتخابات میں حاصل کردہ ووٹوں کی بنیادپر پی ایس 111پر جے یوآئی کااستحقاق تسلیم کرنے کامطالبہ کیاہے-جے یوآئی کے مقامی رہنمائوں اور یونٹوں نے ایم ایم اے کے قائدین سے سید عبیداللہ شاہ کو ایم ایم اے کاٹکٹ جاری کرنے کامطالبہ کیاہے-2002 کے عام انتخابات میں سابقہ پی ایس 112سے جے یوپی کے محمداحمدصدیقی نے حصہ لیا تھا جو ابتدائی نتائج میں جیت گئے تھے مگربعدمیں ان کی جیت شکست میں تبدیل کی گئی تھی-جے یوآئی کے امیدوار سید عبیداللہ شاہ نے کاغذات نامزدگی جمع کرانے کے بعد شیرِیں جناح کالونی سے اپنی انتخابی مہم کاآغازکردیا،محمدی مسجد روڈ پر افتتاحی جلسے میں عوام کی کثیرتعداد شریک تھی-جے یوآئی رہنمائوں کے مطابق سابقہ پی ایس 89 اور این اے 239 میں شامل جنرل آباد سے 2013 کے عام انتخابات میں جے یوآئی امیدوارنے5 ہزارسے زائد ووٹ حاصل کئے تھے جبکہ سابقہ پی ایس 112اوراین اے 250 میں بھی جے یوآئی نے قابل ذکرووٹ لئے تھے-واضح رہے کہ بلدیاتی انتخابات میں جے یوآئی کے پینل نے سید عبیداللہ شاہ کی سرکردگی میں ایک یوسی سے 3 ہزارووٹ حاصل کئے تھے-