سکیورٹی فورسزکی کارروائی،ایک کرنل شہید،3 دہشتگرد ہلاک

کوئٹہ(بولونیوز) کوئٹہ کے علاقے کلی الماس میں کارروائی کے دوران 2 خودکش بمباروں سمیت3دہشت گرد ہلاک ہوگئے جبکہ ملٹری انٹیلی جنس کے کرنل سہیل عابد شہید اور4سکیورٹی اہلکارزخمی ہوئے جن میں سے2کی حالت تشویشنا ک ہے۔تفصیلات کے مطابق آپریشن ردالفساد کے تحت بلوچستان کی سرزمین دہشت گردوں پرتنگ کردی گئی ہے۔ آئی ایس پی آرکے مطابق سکیورٹی فورسزکوکلی الماس کے علاقہ میں خودکش بمباروں کی موجودگی کی اطلاع ملی جس پرفورسزنے کارروائی کی، فائرنگ کے تبادلے کے بعد 2 خود کش بمباروں سمیت 3 دہشتگرد ہلاک ہوگئے جبکہ ایک زخمی دہشتگرد کو گرفتار کر لیا گیا۔یاد رہے کہ مرنے والوں میں کالعدم لشکر جھنگوی بلوچستان کا سرغنہ سلمان بادینی بھی شامل ہے جو سو سے زیادہ ہزارہ کمیونٹی کے افراد اور پولیس اہلکاروں کے قتل میں ملوث تھا، سر کی قیمت 20 لاکھ مقررتھی۔ آئی ایس پی آرکے مطابق ہلاک 2خود کش بمبارافغانی ہیں۔ایک نجی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق دہشت گردوں سے مقابلے کے دوران ملٹری انٹیلی جنس کے کرنل سہیل عابدشہید ہوگئے، فائرنگ کے تبادلے میں4سکیورٹی اہلکارزخمی ہوئے جن میں سے دو کی حالت تشویشنا ک بتائی گئی ہے۔ کرنل سہیل عابد شہید کا تعلق وہاڑی کے نواحی گاؤں سے ہے۔ انہوں نے گورنمنٹ کالج وہاڑی سے ایف ایس سی کیا۔ سہیل عابد شہید کے پسماندگان میں بیوہ، تین بیٹیاں اور ایک بیٹا شامل ہے۔آئی ایس پی آر کے مطابق کارروائی کے دوران بڑی تعداد میں اسلحہ، گولہ و بارود بھی برآمد ہوا۔