خواتین سے متعلق بیان،ن لیگ،پی ٹی آئی میں لفظی جنگ

اسلام آباد(بولونیوز) خواتین سے متعلق غیرمناسب الفاظ کا تنازع شدت اختیارکرگیا ہے اورمسلم لیگ ن اورتحریک انصاف کے رہنماؤں نے ایک دوسرے کے خلاف لفظی گولہ باری شروع کر دی ہے۔تفصیلات کے مطابق اسلام آباد کی انسداد دہشت گردی عدالت کےباہر میڈیا سےگفتگو کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ ’مقدمے میں بریت پر خوش ہوں، مجھ پر دہشت گردی کا کیس بنایا گیا، یہ ووٹ لے کر آتے ہیں مگر آمر سے بھی برا کام کرتے ہیں، تحریک انصاف جب اقتدار میں آئے گی تو سیاسی لیڈروں کے خلاف قانون کے غلط استعمال کو ختم کرے گی-ایک نجی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق انہوں نے کہا کہ ’میاں صاحب کا دماغی توازن ٹھیک نہیں، انہیں ماہر نفسیات سے چیک کرانا چاہیے، وہ کہہ رہےہیں کہ عمران خان کو ووٹ دینا ایسا ہی جیسے فوج کو ووٹ دینا، عدلیہ کو ووٹ دینا، یہ ہماری الیکشن مہم کررہے ہیں کیونکہ لوگ ان اداروں سے خوش ہیں-یاد رہے کہ چیئرمین پی ٹی آئی کا کہنا تھا کہ’ماضی میں نیب پٹو ا ر یوں اورسرکاری افسرکوپکڑتی تھی، کبھی وزرا کو نہیں پکڑا، نیب نے پہلی مرتبہ برسر اقتدار لوگوں کے خلاف ایکشن لیا ہے، اس سے پہلے نیب نے کبھی حکمران جماعت کے لوگوں کو نہیں پکڑا لہٰذا نیب جو کررہی ہے اس کو داد دیتا ہوں-انہوں نے کہا کہ ’نیب نے مجھ پرہیلی کاپٹر کا کیس کیا ہے، ہیلی کاپٹر کے استعمال کے کیس میں نیب کو تحقیقات کے لیے دعوت دیتے ہیں، مجھے ڈر نہیں شہبازشریف کیوں ڈررہے ہیں، وہ بہت جلدی ڈر جاتے ہیں-