ملک میں بدترین لوڈشیڈنگ،16سے 20 گھنٹے بجلی غائب

کراچی (بولونیوز) ملک بھر میں بدترین لوڈشیڈنگ کا سلسلہ تھم نہ سکا۔ بجلی بندش کا دورانیہ16 سے20 گھنٹے تک جا پہنچا ہے۔۔گرمی شروع ہوتے ہی لوڈشیڈنگ نے شہریوں کی چیخیں نکلوا دیں۔ کئی شہروں میں بارش اور موسم خوشگوار ہونے کے باوجود غیر اعلانیہ طویل بجلی بندش کا سلسلہ جاری ہے۔پنڈی گھیب میں لوڈشیڈنگ کے ستائے شہری سڑکوں پر نکل آئے اور ٹائر جلا کر روڈ بلاک کر دی۔تفصیلات کے مطابق چکوال میں لوڈشیڈنگ کے ساتھ ساتھ وولٹیج کم اور زیادہ ہونے سے الیکٹرونکس کی اشیا جل گئیں۔بہاولپور، بھکر، لودھراں ،بہاولنگر، ہارون آباد، وہاڑی بدترین لوڈشیڈنگ کی لپیٹ میں ہیں۔ بجلی بندش کا دورانیہ 12 گھنٹے سے بھی تجاوز کر گیا، جس نے کاروبار زندگی معطل کر کے رکھ دیا۔بدترین لوڈشیڈنگ پر شہری حکومت کے خلاف پھٹ پڑے۔ لوڈشیڈنگ ختم کرنے کے جھوٹے دعوے کرنے پرحکمرانوں سے معافی مانگنے کا مطالبہ کر دیا۔ایک نجی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق چکوال، شکر گڑھ، حافظ آباد، نارووال، رینالہ خورد سمیت دیگر شہروں میں بھی لوڈشیڈنگ کے خلاف شہری سراپا احتجاج ہیں۔نوابشاہ، قمبر، شکار پور، ٹنڈوالہ یار میں بھی بجلی کی آنکھ مچولی نے شہریوں کو پریشان کر رکھا ہے۔۔پنجاب کے صوبائی درالحکومت لاہور میں بھی لوڈشیڈنگ کے دورانیے میں اضافہ کردیا گیا ہے اور کئی علاقوں میں ہر دو گھنٹے کے بعد ایک گھنٹے کے لیے بجلی بند کی جارہی ہے جبکہ شہر بھر میں لوڈشیڈنگ کا دورانیہ 4سے6گھنٹے تک جا پہنچا ہے-