زرداری اتنے معصوم تھے،ورغلانے میں آگئے،نوازشریف

لاہور(بولونیوز) نواز شریف کا کہنا ہے حکومتی حصہ بننے کیلئے ججز کی بحالی، 17 ویں ترمیم کے خاتمے کو شرائط بنایا، آصف زرداری اتنے ہی بھولے تھے کہ میرے ورغلانے میں آگئے، بتائیں وعدہ خلافی کس نے کی، دھوکا کس نے دیا، تین سال بعد سچ بولنے کا خیال کیوں آگیا ؟ اُس وقت کیوں نہیں بولے، پٹی میں نے پڑھائی تھی۔تفصیلات کے مطابق سابق وزیر اعظم نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ اینٹ سے اینٹ بجانے والے بیان پر ان کو ناپسندیدگی کا پیغام بھیجا تھا، بیان کے بعد اگلے دن طے شدہ ملاقات بھی منسوخ کر دی تھی۔ انہوں نے کہا آصف زرداری کا بیان قومی جماعت کی قیادت کرنیوالے کے شایان شان نہیں، ایک بڑے اصولی، نظریاتی مشن کی جدوجہد میں مصروف ہوں، میرا مشن پاکستان کے عوام کا حق، حکمرانی کی بحالی ہے، اس بیان بازی کا حصہ نہیں بننا چاہتا۔ایک نجی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق نواز شریف کا کہنا تھا زرداری صاحب اپنا وزن عوام کے بجائے کسی اور پلڑے میں ڈالنا چاہتے ہیں تو شوق سےڈالیں، لیکن کیچڑ اچھالنے اور تاریخ کو مسخ کرنے سے گریز کریں، مشرف سے اختلاف کا مقصد یہ نہیں ہونا چاہیے کہ ادارے کی اینٹ سے اینٹ بجا دی جائے۔ انہوں نے کہا آصف زرداری یہ بھی بتا دیں کہ آج وہ کس کے اشاروں پر کٹھ پتلی بنے ہیں، بہتر ہوگا کہ آصف زرداری ذاتی الزام تراشیوں کا دفتر نہ کھولیں۔