قانون نافذکرنیوالوں کا مختلف علاقوں میں چھاپہ،4افراد گرفتار

کراچی( بولونیوز) طارق روڈ پر نوجوان پر تشدد اور اغواءکی کوشش کا معاملہ قانون نافذ کرنے والے اداروں کا رات گئے مختلف علاقوں میں چھاپہ‘4 افراد کو حراست میں لے کر تھانے منتقل کردیا۔ تفصیلات کے مطابق رات گئے قانون نافذ کرنے والے اداروں نے مختلف علاقوں میں کارروائی کرتے ہوئے4افراد کو حراست میں لے کر تھانے منتقل کردیا۔ ملزم شاہزیب رحمن پنجوانی ولد عبدالرحمن پنجوانی اور اسکے دوست علی محسن ٹی ایم کے گھروں پر بھی چھاپے مارے گئے ہیں اور پولیس کی جانب سے ہل پارک پر شاہزیب رحمن پنجوانی کے داد اکے گھر پر بھی پولیس کی جانب سے چھاپے مارے گئے لیکن ان ملزمان کی گرفتاری عمل میں نہیں آئی ہے باخبر ذرائع کا کہنا ہے کہ ملزم اپنے گارڈز کے ہمراہ روپوش ہوگئے ہیں اور شاہزیب رحمن پنجوانی کے حوالے سے بتایا گیا ہے کہ8سے10 سال قبل ایک واقعے کے فوراً بعد لندن فرار کروادیا تھا بعد ازاں لندن میں بھی لڑائی جھگڑوں کے باعث اس کو وہاں سے نکال دیا ہے۔ ملزم شاہزیب رحمن پنجوانی کے والد کی سی بورڈ لوجسکٹ پرائیویٹ کے نام سے کمپنی ہے اور انتہائی بااثر بتائے جاتے ہیں اور پولیس پر بھی پریشر ڈال رہے ہیں جس کو پولیس خاطر میں نہیں لارہی ہے۔ دوسری جانب ملزم علی محسن ٹی ایم کسٹم افسر زیب اظہر کا بیٹا ہے اور ان دونوںنے اپنے دوستوں اور گارڈز کے ہمراہ نوجوان معین عارف قادری پر بہیمانہ تشدد کیا تھا جس کا مقدمہ فیروز آباد تھانے میں درج کرلیا گیا ہے۔