طارق روڈ پر طالب علم معین قادری پر تشدد اور اغواء کے معاملے میں اہم پیش رفت

کراچی (ایچ آراین ڈبلیو) کراچی کی عوام وڈیرہ اور جاگیر دارانہ نظام سے پہلے ہی تنگ تھی لیکن اب بزنس مین عبدالرحمان پنجوانی اور کسٹم افسر زیبہ اظہر کے بیٹے بھی شہر قائد میں خوف کی علامت بن گئے ہیں ، سی بورڈ لوجیسٹکس ایس ایم سی پرائیوٹ لمیٹیڈ عبدالحمان پنجوانی اور کسٹم افسر زیبہ اظہر کے بیٹوں شاہزیب پنجوانی اور علی محسن نے اپنے دوستوں اور سیکورٹی گارڈز کے ہمراہ طالب علم معین عارف قادری پر تشدد کیا جس کا مقدمہ فیروزآباد تھانے میں درج کرلیا گیا ہے ،، دوسری جانب ملزمان کی فیملی اپنے اثر و رسوخ اور اپنی پوسٹ کا ناجائز فائد اٹھاتے ہوئے پولیس افسران کو پریشر میں لینے اور دباؤ ڈالنے کی کوشیش کی گئی لیکن پولیس ان کے دباؤ کو خاطر میں نہیں لائی ۔ ایس پی جمشید ٹاؤن شمائل اور اے ایس پی طارق کی جانب سے ان کے گھروں میں چھاپے مارے گئے ،، اور دو گارڈز کو حراست میں لے لیا گیا ہے جبکہ شاہزیب پنجوانی اور علی محسن اپنے دوستوں اور گارڈز کے ہمراہ فرار ہیں۔۔۔۔