صوبہ پنجاب،خواتین کیساتھ جنسی زیادتی میں خوفناک اضافہ

لاہور(بولونیوز) پاکستان بھرمیں خواتین پرتشدد اورجنسی زیادتی کے واقعات کی تعداد دن بدن بڑھتی چلی جا رہی ہے جس پر خواتین اور انسانی حقوق کی تنظیمیں تشویش کا اظہار کرتی رہتی ہیں۔تفصیلات کے مطابق تاہم پاکستان کے آبادی کے لحاظ سے سب سے بڑے صوبے پنجاب میں ان واقعات کی تعداد میں خطرناک حد تک اضافہ ہوا ہے جو کہ تشویشناک ہے۔ سال 2017ء میں خواتین کے ساتھ جنسی زیادتی کے واقعات کی تعداد میں سال 2016ء کے مقابلے میں 12٫5 فیصد اضافہ ہوا۔ گزشتہ برس خواتین کے ساتھ جنسی زیادتی کے کل 2700 مقدمات رپورٹ ہوئے۔ایک نجی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق جنسی زیادتی کے جوکیسزعدالتوں میں چلے ان میں 2850 ملزمان کو گواہوں کے اپنے بیان سے منحرف ہونے کی وجہ سے باعزت بری کیا گیا۔ صوبہ پنجاب کی ماتحت عدالتوں میں خواتین اور بچیوں سے زیادتی کے 6600 مقدمات زیرِ التواء ہیں۔