زینب قتل کیس، پنجاب حکومت نے جے آئی ٹی سربراہ کو تبدیل کردیا

لاہور(بولونیوز) پنجاب حکومت نے قصور واقعہ پر بننے والی جے آئی ٹی کے سربراہ کو تبدیل کردیا، آر پی اوملتان محمد ادریس کو جے آئی ٹی کا نیا سربراہ مقررکردیا گیا۔ وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف کا کہنا ہے بچی کے والد جس طرح مطمئن ہونگے جے آئی ٹے ویسے ہی کام کرے گی۔ انہوں نے یقین دہانی کرائی کہ ملزم جلد گرفتار کرلیں گے۔ایک نجی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق قصورکے المناک واقعے پر ڈی پی اوذوالفقاراحمد کوعہدے سے ہٹا کرزاہد مروت کو ضلعی پولیس کا نیا سربراہ بنایا گیا۔ وزیراعلیٰ پنجاب نے معاملے کی تحقیقات کے لئے جے آئی ٹی بنائی تھی۔ ترجمان پنجاب حکومت کا کہنا تھا ذوالفقار احمد کو بچی کے سفاکانہ قتل کے ملزم گرفتارنہ کرنے اور شہر میں امن و امان کی صورتحال برقرار رکھنے میں ناکامی پر ہٹایا گیا۔ وزیراعلیٰ پنجاب نے ایڈیشنل آئی جی ابوبکر خدا بخش کی سربراہی میں جے آئی ٹی بنائی گئی تھی جس میں آئی ایس آئی، ایم آئی اور آئی بی کے افسر شامل ہیں۔