اسٹاک ایکسچینج میں تیزی، انڈیکس 3ماہ بعد 43 ہزارکی حد پربحال

کراچی(بولونیوز) نئے کاروباری ہفتے کے پہلے ہی روز سٹاک مارکیٹ میں زبردست تیزی دیکھی گئی اور انڈیکس ساڑھے 3 ماہ بعد 43 ہزار کی حد پربحال ہو گیا جبکہ سرمائے میں 95 ارب سے زائد کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا جس کے سبب سرمائے کا مجموعی حجم 89 کھرب سے بڑھ گیا۔تفصیلات کے مطابق پیرکومارکیٹ میں فرٹیلائزر، سٹیل،گیس اور فوڈ سیکٹر کے حصص میں نمایاں خریداری کا رجحان رہا جس کے باعث ٹریڈنگ کے دوران انڈیکس کی 6 نفسیاتی حد یں بحال ہو گئیں، اسٹاک مارکیٹ میں پیرکو کاروبار کے اختتام پرکے ایس ای 100 انڈیکس میں 588 پوائنٹس کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا جس سے انڈیکس 42523 پوائنٹس سے بڑھ کر43112 پوائنٹس ہوگیا،تفصیلات کے مطابق 302 پوائنٹس کے اضافے سے کے ایس ای 30 انڈیکس 21760 پوائنٹس اور کے ایس ای آل شیئرز انڈیکس 335 پوائنٹس اضافے سے 30877 پوائنٹس سے بڑھ کر 31212 پوائنٹس پر جا پہنچا، کاروباری تیزی کا رجحان غالب آنے سے سرمائے میں 95 ارب 42 کروڑ 23 لاکھ 51 ہزار 482 روپے کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا جس کے نتیجے میں سرمائے کا مجموعی حجم 88 کھرب 87 ارب 77 کروڑ 64 لاکھ 89 ہزار 535 روپے سے بڑھ کر 89 کھرب 83 ارب 19 کروڑ 88 لاکھ 41 ہزار 17 روپے ہو گیا، پیر کو 11 کروڑ روپے مالیت کے 27 کروڑ 6 لاکھ 11 ہزار حصص کے سودے ہوئے جبکہ گزشتہ جمعہ کو 9 ارب روپے مالیت کے 26 کروڑ 9 لاکھ 49 ہزار حصص کے سودے ہوئے تھے۔ایک نجی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق 394 کمپنیوں کا کاروبار ہوا جس میں سے 295 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اضافہ، 78 میں کمی اور 21 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں استحکام رہا، کاروبار کے لحاظ سے ورلڈ کال ٹیلی کام 3 کروڑ 52 لاکھ، ایزگارڈنائن ایک کروڑ 56 لاکھ، عائشہ سٹیل مل ایک کروڑ 29 لاکھ، ٹی آر جی پاک لمیٹڈ ایک کروڑ 22 لاکھ اور بینک آف پنجاب ایک کروڑ 17 لاکھ حصص کے سودوں سے سرفہرست رہے،قیمتوں کے اعتبار سے فلپ مورس پاک کے حصص کی قیمت 150 روپے کے اضافے سے 3190.00 روپے اور وائیتھ پاک لمیٹڈ کے حصص کی قیمت 75.86 روپے کے اضافے سے 1593.07روپے ہو گئی جبکہ نیسلے پاکستان اور باٹا پاک کے حصص کی قیمتوں میں بالترتیب 300 روپے اور 106.61 روپے کی کمی ریکارڈ کی گئی جس کے سبب نیسلے پاکستان کے حصص کی قیمت 11400.00 روپے جبکہ باٹا پاک کے حصص کی قیمت 2496.66 روپے پر آگئی-