جارحیت کا مقصد کشمیر میں جدوجہد سے توجہ ہٹانا ہے،مشاہد حسین سید

اسلام آباد(بولو نیوز) سینیٹ قائمہ کمیٹی دفاع کو بتایا گیا ہے کہ بھارت کی جانب سے ایک سال میں سیز فائر کی تین سو تیس خلاف ورزیاں کی گئیں، پاکستانی افواج کی جوابی کارروائی میں چالیس بھارتی فوجی جہنم واصل ہوئے۔ایک نجی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق مشاہد حسین سید کی زیر صدارت سینٹ قائمہ کمیٹی دفاع کو سیکیورٹی صورتحال، ایل اوسی پر بھارتی اشتعال انگیزیوں پر بریفنگ دی گئی، کمیٹی نے سیز فائر کی بھارتی خلاف ورزیوں کی شدید مذمت کی۔ تفصیلات کے مطابق وزارت دفاع کے حکام نے بریفنگ میں بتایا کہ بھارتی جارحیت سے بارہ فوجی اور پینتالیس شہری شہید جبکہ ایک سو اڑتیس افراد زخمی ہوئے، جوابی کارروائی میں چالیس بھارتی فوجی مارے گئے۔ بریفنگ میں مزید بتایا گیا کہ دو ہزار تین کے بعد پہلی بارتوپ خانہ استعمال کیا گیا، بھارتی جارحیت کا مقصد کشمیر میں جدوجہد سے توجہ ہٹانا ہے، بین الاقوامی دباؤ پر بھارت اشتعال انگیزی سے پیچھے ہٹا ہے ۔ کمیٹی نے نیشنل کمانڈ اینڈ کنٹرول اتھارٹی بل کی منظوری دے دی ۔