کشمیری قوم کی ثابت قدمی کو سلام پیش کرتے ہیں،دفترخارجہ

اسلام آباد(بولو نیوز) پاکستان نے مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کی سخت مذمت کرتے ہوئے عالمی برادری سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔ دفتر خارجہ نے نو منتخب امریکی صدر کی مسئلہ کشمیر کے حل میں کردار کی پیشکش کا بھی خیر مقدم کیا ہے۔ ترجمان دفتر خارجہ نے نفیس ذکریا نے کہا کہ افغانستان مسائل کا ذمہ دار پاکستان کو ٹھہرانے کے بجائے بارڈر مینجمنٹ میکانزم پر توجہ دے۔ ایک نجی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق بھارتی خفیہ ایجنسی افغانستان کی سر زمین سے پاکستان میں دہشتگردی کروا رہی ہے۔ طالبان، القاعدہ، جماعت الاحرار اور حقانی گروپ افغانستان سے کام کر رہی ہیں۔ جولائی سے اب تک دہشتگرد گروہوں کے آٹھ سینئر کمانڈر افغانستان میں مارے جا چکے ہیں۔ نفیس ذکریا نے کہا کہ بھارت نے ہارٹ آف ایشیاء کانفرنس کا ماحول خراب کرنے کی کوشش کی جس کا منفی تاثر ابھرا۔ تفصیلات کے مطابق بھارت کی جانب سے انسانی حقوق کی سنگین خلاف وزریوں کے باوجود کشمیری قوم کی ثابت قدمی کو سلام پیش کرتے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ پاکستان اور بھارت کے درمیان ثالثی کی پیشکش کرنے پر امریکا کا خیر مقدم کرتے ہیں۔